Shohar Ka Bivi Ko Kharcha Na Dena

---Shohar Ka Bivi Ko Kharcha Na Dena

Shohar Ka Bivi Ko Kharcha Na Dena

 jo Shohar k dil o dimagh main dakhil ho kar Ehsas E Zimadari paida karti hain aur Bivi say Muhabbat k jazbat ko ubharti hain aur Shohar na sirf Bivi ko kharcha day ga balkay apni tamam zimadarion ko bhi khoob nibhayega aur kisi ki baton main aa kar Bivi ka mukhalif nahi hoga balky Bivi k haqooq puri tarha nibhaye ga aur mian bivi main muhabbat barhanay k liye bhi yehi naqsh kaafi hai.

Description

Aisi biwian jin k shohar un say mohabbat nahi karte or na hi kharcha detay hain. Un bivion k liye hamaray Rohani Ilaj Centre mein Naqsh Shohar Ka Bivi Ko Kharcha Na Dena tayar kia gaya hai. Is taweez mein aisa Ism e Azam or Qurani Ayat tehreer hain. Jiski barkat se Shohar k dil mein bivi ki intehai muhabbat paida hoti hai.

Usay apni zimadarion ka ehsas hone lagta hai. Or yoon mian biwi mein mohabbat din ba din barhti jati hai. Jiski badolat shohar biwi ko na sirf izzat, chahat or mohabbat deta hai balkay usay kharcha bhi deta hai. Lehaza, mian biwi mein mohabbat barhanay ka ye taweez hasil karnay k liye diye gay link par click karen. Ya phir neche mojud Phone No par direct contact karen.

NAQSH HASIL KARNAY KA TARIQA

شوہر کا بیوی کو خرچہ نہ دینا

 نقش نمبر83 (شوہر کا بیوی کو خرچہ نہ دینا) ہمارا یہ موضوع ان بیویوں کے لیے ہے۔ جن کے شوہر انہیں خرچہ نہیں دیتے۔ جس کی وجہ سے بیوی گھریلو ضروریات کو پورا نہیں کر پاتی۔ اور میاں بیوی میں نا اتفاقی پیدا ہوجاتی ہے۔ جس سے میاں بیوی کے رشتے میں احترام ختم ہو جاتا ہے۔ سوال یہ ہے کہ شوہر بیوی کو خرچہ کیوں نہیں دیتے۔

شوہر اور بیوی میں لڑائی کی وجوہات

شوہر کے اس رویے کی کئی وجوہات ہوسکتی ہیں۔ لیکن اس کے جو قریب ترین ظاہری وجہ ہے وہ یہ ہے کہ ایسے شوہر جو ناقص العقل ہوں۔ وہ دوسروں کی باتوں میں آکر بیوی کے مخالف ہو جاتے ہیں۔ اور اسی مخالفت کی بنا پر بیوی سے بدسلوکی کرنا۔ خرچہ نہ دینا۔ بچوں سے پیار نہ کرنا۔ بیوی کی مار پٹائی کرنا۔ سسرال کی طرف سے بیوی پر لگے ہوئے الزامات کو بغیر تصدیق کیے۔ اسے ہی قصوروار سمجھ کر ذلیل کرنا۔ بیوی کی خدمات کی قدر نہ کرنا۔ بیوی کے حصے کا خرچ اپنے بہن بھائیوں, رشتے داروں اور غیر عورتوں کو دے کر بیوی کی حق تلفی کرنا۔ جس سے بیوی کے دل میں شوہر کے لئے نفرت پیدا ہوتی ہے۔ اور وہ اپنے اخراجات کو پورا کرنے کے لئے ماں باپ اور بہن بھائیوں سے مدد لے کر ان کی نظروں میں شرمندگی محسوس کرتی ہے۔ شوہر کے اس رویے کی روحانی وجوہات یہ ہیں۔ کہ جس بیوی کے سسرالی رشتے داروں میں ایسے حاسدین موجود  ہوں۔ جو ان میاں بیوی کے رشتے سے ناخوش ہوں۔ تو وہ مختلف چالوں سے اس رشتہ کو توڑنے کی کوشش کرتے ہیں۔ ایسے حاسدین بدعملیات کے سہارے میاں بیوی کی محبت کو ختم کرنے کا ایسا وار کرواتے ہیں۔ کہ جو کبھی خطا نہیں جاتا۔ اور اگر وہ بدعملیات کا سہارا نہ لیں۔ تو ان کے دل و دماغ میں موجود نفرت بھی ان میاں بیوی کی محبت کو ختم کرنے کے لیے کافی ہے۔ کیوں کے حاسدین کے دماغ سے نکلنے والی نفرت کی لہریں میاں بیوی کے گرد گردش کرنا شروع کر دیتی ہیں۔

شوہر اور بیوی کا روحانی تحفظ

اور یہ لہریں اتنی طاقتور ہوتی ہیں کہ اگر میاں بیوی نے پہلے سے اپنا روحانی تحفظ نہ کیا ہو۔ تو ان ہی حاسدانہ لہروں سے میاں بیوی کے گرد شیطانی حصار قائم ہو جاتا ہے۔ اس شیطانی حصار کے قائم ہوتے ہی شوہر کے دل میں بیوی کے خلاف نفرت کے جذبات ابھرتے ہیں۔ اور شوہر ہر وہ کام کرتا ہے۔ جس سے بیوی پریشان ہو۔ کیونکہ یہی شیطانی لہریں شوہر کے دماغ کو اپنے کنٹرول میں کر کے اس کے دل سے احساس ذمہ داری ختم کر دیتی ہیں۔ ان حالات میں شوہر کو بیوی کی بات سمجھ نہیں آتی۔ جس سے میاں بیوی میں لڑائی جھگڑے شروع ہو جاتے ہیں۔ اور اس ہی شیطانی حصار کی وجہ سے میاں بیوی کو برے خواب دکھائی دینا۔ ایک دوسرے کی شکل دیکھ کر غصہ آجانا، ازدواجی تعلقات قائم کرنے سے بیزاری ہو جانا، صحت خراب رہنا، چڑچڑاپن، ڈپریشن، تھکاوٹ رہنا، اور اس قسم کے دیگر مسائل شروع ہوجاتے ہیں۔ یہی شیطانی اثرات بیوی کو طلاق لینے کی سوچیں دیتے ہیں۔ اور جن بیویوں پر اثرات زیادہ حاوی ہوجائیں۔ وہ شوہر کے اس رویہ سے تنگ آکر گھر چھوڑ کر چلی جاتی ہیں ۔یا طلاق لینے کی کوشش کرتی ہیں۔ اور بہت سی خواتین تو اصل وجہ سے بے خبر ہونے کی وجہ سے طلاق لے کر اپنا گھر خراب کر لیتی ہیں۔ ہم آپ کو بتاتے چلیں کے ایسے حالات میں میاں بیوی کو صرف اس شیطانی حصار کو ختم کرنے کی ضرورت ہوتی ہے۔ جو کہ صرف درست روحانی علاج سے ہی ممکن ہے۔

شوہر سے خرچہ لینے کا تعویز

اس کے بہترین روحانی علاج کے لیے ہمارے بزرگوں نے اپنے مراقبات کے ذریعے گرہن کے دوران دنیا میں نزول ہونے والی محبت کی روحانیت پر عبور حاصل کیا۔ جس سے ان پر یہ راز کھلا کہ یہ روحانیت جس انسانی جسم میں داخل ہوتی ہے۔ تو نفرت کے شیطانی حصار کو ختم کرکے محبت کا پاک حصار قائم کرنے کی خاصیت رکھتی ہے۔ اسی روحانیت کو استعمال کرتے ہوئے انہوں نے یہ نقش (شوہر کا بیوی کو خرچہ نہ دینا تیار) کیا۔ جو کہ سائل کے نام منسوب ہوتے ہی اپنے اندر سے محبت کی ایسی لہریں خارج کرتا ہے۔ جو سائل کے دل و دماغ میں داخل ہوکر نفرت اور حسد کی لہروں کو ختم کرکے محبت کی لہریں پیدا کرتی ہیں۔ جس سے سائل کے دل میں احساس ذمہ داری اور بیوی سے محبت کے جذبات خودبخود ابھرنا شروع ہو جاتے ہیں۔ اس کے بعد یہی لہریں سائل کے گرد گردش کرنا شروع کر دیتی ہیں۔ جن کو دیکھتے ہی شیطانی حصار ایسے ختم ہوتا ہے۔ کہ جیسے وہ تھا ہی نہیں۔ اور اس حصار کے ختم ہوتے ہی یہ روحانی لہریں سائل کے گرد حصار قائم کرتی ہیں۔ جسے روحانی تحفظ کہا جاتا ہے۔ اس تعویز کی برکت سے سائل پر آئندہ کسی بھی حاسد کی شیطانی لہریں یا بدعملیات کا اثر نہیں ہوگا۔ کیوں کہ ان کا ہر وار اسی روحانی تحفظ کے حصار سے ٹکرا کر واپس چلا جائے گا۔ جس سے میاں بیوی میں محبت قائم رہے گی۔ اور شوہر نہ صرف بیوی کو خرچہ دے گا۔ بلکہ اپنی تمام ذمہ داریوں کو خوب نبھائے گا۔ اور کسی کی باتوں میں آکر بیوی کا مخالف نہیں ہوگا انشاءاللہ۔

نوٹ: یاد رکھیں جب تک میاں بیوی گناہوں سے دور رہیں گے۔ تب تک یہ روحانی تحفظ کا حصار قائم رہے گا جو کہ میاں بیوی کے رشتے میں ہمیشہ محبت اور عزت کو قائم رکھے گا۔

اگر آپ یہ نقش حاصل کرنا چاہتے ہیں تو براہ راست رابطہ قائم کریں۔ یا دیئے گئے لنک پر کلک کریں۔

نقش حاصل کرنے کا طریقہ

Contact For Female 0323-7718185-8

Contact For Male    0323-4028555