Shaitani Khayalaat Door Karna

Description

سورئہ الیسین اور غیبی آواز
سورئہ البقرہ کے تعویذ سے جادو کا توڑ

Ya topic (Shaitani Khayalaat Door Karna) un afard k liye h.Jin ko Namaz main khayalat or waswasy atay hain, or Jin k dimagh main har waqat buri or shaitani sochon ki bharmar hoti h. Or chah kar bhi wo apni es galt or buri sochon or waswason ko khatam nahi kar paty. Agr ap chah kar bhi un Khayalat ya Shaitani Soch say nijat hasil nahi kar paa rahay to uska behtreen Rohani hal is Naqsh (Shaitani Khayalaat Door Karna) ki surat main mojud hai.

ya Naqsh (Shaitani Khayalaat Door Karna) jasy hi sayal k name mansoob hota h.Es sy nikalny wali rahmani lahren sayal k dil o dimagh main dakhil ho kar sabqa shaitani lahron ko khatam kar k usy apni panh main ly lati hain.

Mazeed tafseelat k liye barahe raast rabta karain ya diye gaye link par click karain.

NAQSH HASIL KARNAY KA TARIQA

شیطانی خیالات دور کرنا

نمبر50 (شیطانی خیالات دور کرنا): ہمارا یہ موضوع ان افراد کے لیے ہے۔جن کے دماغ میں ہر وقت شیطانی خیالات کی بھرمار رہتی ہے۔ اور وہ چاہ کر بھی ان خیالات سے اپنا دماغ خالی نہیں کر پاتے ان شیطانی خیالات کے دماغ پر حاوی رہنے کی وجہ سے ایسے افراد ا للہ کے ذکر،عبادات اور نیک اعمال سے دور رہتے ہیں۔شیطانیت ہر وقت دل و دماغ پر سوار رہنے سے ایسے افراد گناہوں کی وادی میں کھنچتے چلے جاتے ہیں۔اور شیطانیت ان کو مکمل طور پر اپنی لپیٹ میں لے لیتی ہے۔

شیطانی خیالات کی روحانی وجہ

ہمارے مشاہدات کے مطابق شیطانی خیالات کی جو روحانی وجہ ہے، وہ یہ ہے کہ ہر انسان کے گرد شیطانی یا رحمانی حصار ہوتا ہے- رحمانی حصار اللہ کے ذکر، عبادات اور گناہوں سے دور رہنے سے قائم ہوتا ہے اور اس روحانی حصار کی بدولت انسان خوشیوں سے بھرپور اور آئیڈیل زندگی گزارتا ہے اور اس کے دماغ میں ہر وقت اللہ کا قرب اور نیکی کے کام کرنے کے خیال خیالات آتے ہیں اور اکثر خوابوں میں پاک مقامات یا پاک ہستیوں کی زایارت ہوتی ہیں، اور اس انسان کی ہر دعا اللہ کی بارگاہ میں قبول ہوتی ہے اور اکثر آنے والی پریشانیوں کا خواب میں پہلے ہی اشارہ ہوجاتا ہے۔ اور یہ ساری رحمتیں اسی رحمانی حصار کی بدولت ملتی ہیں اور تب تک قائم رہتی ہیں جب تک انسان گناہوں سے دور رہتا ہے-

شیطانی حصار

اس کے برعکس جو انسان گناہوں کا مرتکب ہو یا جس پر جادو ٹونہ کے اثرات موجود ہوں اس کے گرد جو حصار قائم ہوتا ہے اسے شیطانی حصار کہتے ہیں۔ اور یہ حصار ہر وقت اس انسان کے دماغ میں اپنی شیطانی لہریں داخل کرتا ہے۔ جس کی وجہ سے اس انسان کا دل بے چین رہتا ہے، عبادت میں دل نہیں لگتا، دعا قبول نہیں ہوتی، بھیانک خواب آتے ہیں، گناہ کے خیالات سے اسے لذت محسوس ہوتی ہے گستاخانہ سوچے آتی ہیں، اور مختصر یہ ہے کہ اس انسان پر جو بھی پریشانیاں آتی ہیں۔ خواہ وہ شیطانی خیالات کی صورت میں ہوں یا گھریلو پریشانیوں کی صورت میں وہ اسی شیطانی حصار کی وجہ سے اس پر مسلط ہوتی ہیں۔ اس شیطانی حصار کا خاتمہ ہی اصل میں شیطانی خیالات اور دنیاوی پریشانیوں کا بھی خاتمہ ہے اور اسی شیطانی حصار کا خاتمہ کامل مرشد کی درست راہنمائی سے ہی ممکن ہے-

اسی لیے سرکار دو جہاں صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا:(جس کا کوئی مرشد نہیں اس کا مرشد شیطان ہے)

اگر آپ اس شیطانی حصار کو ختم کرکے رحمانی حصار قائم کرنا چاہتے ہیں تو اس کا بہترین حل حضرت لوط علیہ السلام کے اسم اعظم میں ہے۔ جن کی قوم گناہوں کی لذت میں ڈوبی ہوئی تھی۔ اور ان کی راہنمائی کے لیے وہ اس قوم میں پیغمبر بنا کر بھیجے گئے اور جن لوگوں نے ان کی نصیحت کو مانا وہ رحمتوں کے حقدار بنے اور جنہوں نے انکار کیا وہ عذاب الہی میں گرفتار ہوئے-

شیطانی خیالات دور کرنے کا تعویز

ہمارے بزرگوں نے حضرت لوط علیہ السلام کے اسم اعظم کی روحانیت کا استعمال کر کے نقوش تیار کیے اور بے شمار سائلین کو شیطانی حصار سے نجات دلوائی- اس نقش (شیطانی خیالات دور کرنا) سے فیضیاب ہونے کے لیے اسے سائل کے نام منسوب کیا جاتا ہے۔ اور منسوب ہوتے ہی اس نقش (شیطانی خیالات دور کرنا) سے نکلنے والی رحمانی لہریں اس سائل کے گرد گردش کرتی ہیں۔ اور ان لہروں کے گردش کرتے ہی شیطانی حصار ایسے ختم ہوتا ہے۔جیسے کہ وہ تھا ہی نہیں اور اسی حصار کے ختم ہوتے ہی سائل کا دماغ شیطانی خیالات سے آزاد ہو جاتا ہے۔یہی روحانی لہریں سائل کے گرد اپنی پاک لہروں سے رحمانی حصار قائم کرتی ہیں،جو کہ سائل کے لیے ہمیشہ رحمتیں، دعاؤں کی قبولیت اور روحانی خوشی کا سبب بنتا ہے-
نوٹ: اس نقش (شیطانی خیالات دور کرنا) سے قائم ہونے والا روحانی حصار اسی صورت میں ختم ہوتا ہے جب سائل گناہ کا مرتکب ہو –

نقش حاصل کرنے کا طریقہ

Contact For Female 0323-7718187-8

Contact For Male    0323-4028555

Go to Top